twitter-cheif-executive-account-hacked 18

ٹوئٹر کے چیف ایگزیکٹو کا اکاﺅنٹ بھی ہیک ہو گیا مگر اس کے بعد کمپنی کیساتھ کیا ہوا؟ جان کر آپ کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ جائیں

معروف سوشل میڈیا ویب سائٹ ”ٹوئٹر“ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) جیک ڈورسی کا اکاﺅنٹ ہیک ہو گیا جس کے بعد کمپنی کے حصص میں ایک فیصد کے قریب کمی واقع ہو گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ”ٹوئٹر“ کی جانب سے گزشتہ روز بتایا گیا کہ اس کے چیف ایگزیکٹو جیک ڈورسی کا اکاؤنٹ ہیک ہونے کے بعد اس کے ذریعے نسل پرستی اور دیگر نامناسب مواد پر مشتمل ٹویٹس اور ری ٹویٹس کی گئیں جن کے فالوورز کی تعداد چالیس لاکھ کے قریب ہے۔

ڈورسی کا اکاؤنٹ ہیک ہونے کے بعد پوسٹ کی جانے والی ایک ٹویٹ میں کہا گیا کہ نازی لیڈر ایڈولف ہٹلر بے قصور تھا جبکہ اس کے علاوہ دیگر ٹویٹس میں افریقی نژاد اور یہودی امریکیوں کے خلاف نسل پرستی پر مبنی تبصرے پوسٹ کئے گئے۔

اسی طرح ڈورسی کے سرکاری پیج پر ایک ٹویٹ نمودار ہوئی جس میں کہا گیا کہ ٹویٹر کمپنی کے ہیڈ کوارٹر میں بم موجود ہے تاہم اکاؤنٹ ہیک ہونے کے کچھ دیر بعد نامناسب ٹویٹس کو حذف کر دیا گیا۔جیک ڈورسی کا اکاؤنٹ ہیک ہونے کے انکشاف کے بعد ٹویٹر کمپنی کے حصص کی قیمت میں ایک فی صد کے قریب کمی واقع ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں