ramiz-raja-latest-youtube-video 10

پاکستانی سابق کرکٹر اور کمنٹیٹر وسیم اکرم نے کہا ہیکہ پاکستان کو سری لنکا کے خلاف بہادری سے میچ کھیلنا چاہییے

سابق کپتان رمیز راجہ کا خیال ہے کہ سری لنکا کے خلاف آئندہ سیریز اعتماد حاصل کرنے کے لئے پاکستانی ٹیم کے لئے بہترین ثابت ہوگی۔

اس ماہ کے آخر میں پاکستان اور سری لنکا تین ون ڈے اور زیادہ تر ٹی ٹوئنٹی کراچی اور لاہور میں کھیلے جائیں گے۔

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان تین ون ڈے میچ 27 ستمبر ، 29 ستمبر اور 2 اکتوبر کو اور تین ٹی ٹونٹی میں 5 اکتوبر ، 7 اکتوبر اور 9 اکتوبر کو لاہور میں شروع ہونگے۔

1980 اور 1990 کی دہائی کے دوران پاکستان کی نمائندگی کرنے والے رمیز راجہ نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پاکستانی ٹیم درمیانے نقطہ نظر سے نکل آئے اور نڈر کرکٹ کھیلے اور مختلف قسم کے شاٹس استعمال کیے۔

1980 اور 1990 کی دہائی کے دوران پاکستان کی نمائندگی کرنے والے رمیز راجہ نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پاکستانی ٹیم درمیانے نقطہ نظر سے نکل آئے اور نڈر کرکٹ کھیلے اور مختلف قسم کے شاٹس استعمال کرے۔

انہوں نے اپنے یوٹیوب چینل پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ، “اگر ہم مختلف طرز فکر کے ساتھ نڈر کرکٹ نہیں کھیلیں گے تو ہم ایک بڑی ٹیم یا کھلاڑی نہیں بن سکتے۔

انہوں نے کہا ، “انڈر 23 اور انڈر 19 کھلاڑیوں کو سیریز میں شامل کیا جانا چاہئے تھا کیونکہ یہ کھلاڑیوں کے لئے اعتماد حاصل کرنے کا بہترین موقع تھا۔”

راجہ کا خیال تھا کہ نئی ٹیم مینجمنٹ ہے اور نیا سیزن شروع ہوچکا ہے ، لہذا پاکستان ٹیم کو ایک نئے انداز کے ساتھ سیریز میں جانا ہوگا۔

انہوں نے کہا ، “اگر ٹیم بڑے مارجن سے جیتتی ہے تو سیریز میں پاکستان ٹیم مینجمنٹ اور کپتان کا مختلف نقطہ نظر نظر آئے گا۔”

انہوں نے مزید کہا کہ کلب اور اسکول کی سطح کی کرکٹ کو از سر نو تشکیل دینے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں