eng v nz 47

دنیائے کرکٹ کا نیا سلطان کون؟ فیصلہ آج لارڈز میں ہو گا

انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں آج تاریخی گراونڈ لارڈز میں مدمقابل ہوں گی، جیت کسی کے بھی حصے میں آئے لیکن تاریخ ضرور رقم ہوگی کیوں کہ دونوں ہی ٹیمیں آج تک کوئ ورلڈکپ نہیں جیت سکی ہیں۔

میچ پاکستانی وقت کے مطابق دوپہر ڈھائی بجے شروع ہوگا۔

ہفتے کو لارڈز میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے اوئن مورگن نے کہا کہ گذشتہ 4 سال کی محنت رنگ لارہی ہے، ہمارے پاس خاص موقع ہے، پوری ٹیم چاہتی ہے کہ اپنے مداحوں کیلئے کچھ خاص کرے۔

کیوی کپتان نے کہا کہ مثبت سوچ کے ساتھ جیتنا چاہتے ہیں، تیاری مکمل ہے 4 سال میں بہت کچھ تبدیل ہوچکا ہے، ہماری ٹیم نے پچھلے ورلڈ کپ کی غلطیوں سے بہت کچھ سیکھا ہے۔

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ 2 ایسی ٹیمیں ہیں جو اب تک کوئی بھی ورلڈ کپ اپنے نام نہیں کرسکی ہیں۔ لارڈ ز کے میدان پر ورلڈ کپ 2019 کے فائنل میں جیت جس بھی ٹیم کا مقدر بنی، تاریخ ضرور رقم ہوگی۔

انگلینڈ کی ٹیم اب تک 3 ورلڈ کپ کے فائنل کھیل چکی ہے جبکہ نیوزی لینڈ کی ٹیم کا یہ لگاتار دوسرا فائنل ہوگا۔ لارڈز میں 1979 میں انگلینڈ کو فائنل میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم نے شکست دی جبکہ 1992 کے ورلڈ کپ فائنل میں پاکستان نے انگلینڈ کو شکست دے کر ورلڈ کپ جیتا تھا۔

اتوار کو لارڈز میں فائنل کھیلنے والی دونوں ٹیمیں گروپ میچوں میں پاکستان کی ٹیم سے شکست کھا چکی ہیں۔

مزید تفصیل : ورلڈکپ 2019 مین کس ٹیم نے کتنی رقم کمائ

ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کی فاتح ٹیم کو 40 لاکھ ڈالرز کی انعامی رقم ملے گی۔ فائنل ہارنے والی ٹیم 20 لاکھ ڈالرز کی حقدار ہوگی۔
پاکستان ٹیم کو 3 لاکھ ڈالرز ملے ہیں جبکہ سیمی فائنل ہارنے والی بھارت اور آسٹریلیا کی ٹیموں 8،8 لاکھ ڈالرز دیے گئے ہیں۔ ہر ٹیم کو لیگ میچ جیتنے پر 40 ہزارڈالرز دیئے گئے۔ اس حساب سے پاکستان کی ٹیم نے پانچ گروپ میچوں میں کامیابی حاصل ھوی اس لیے پاکستانی ٹیم کو 2 لاکھ ڈالرز ملے ہیں۔ پاکستاان کرکٹ ٹیم کو ٹورنامنٹ سے ہونے والی آمدنی کا الگ سے شیئر ملے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں