judge-arshad-malik-video-case 22

جج ارشد ملک ویڈیو سکینڈل،ناصر جنجوعہ سمیت تینوں ملزموں کا5 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

اسلام آباد ڈسٹرکٹ کورٹ اسلا م آباد نے جج ارشد ملک ویڈیو سکینڈل میں گرفتار3 ملزموں کا 5 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا

انہیں ایف آئی اے کے حوالے کردیا۔تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے ویڈیو سکینڈل میں گرفتار ملزمان ناصر جنجوعہ،غلام جیلانی اور خرم یوسف کو سول جج شائستہ کنڈی کی عدالت میں پیش کیا،ایف آئی اے کی جانب سے ملزمان کے 5روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی،جج شائستہ کنڈی نے استفسار کیاکہ آپ کو ملزمان کا جسمانی ریمانڈ کیوں چاہیے؟ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے کہا کہ ملزموں سے ریکوری کرنی ہے اس لئے جسمانی ریمانڈ چاہیے، وکیل ناصر جنجوعہ نے کہاکہ یہاں پرمختلف ویڈیوزکا حوالہ دیا گیا،ایک ویڈیو میاں طارق نے بنائی، ایک ویڈیو جاتی امرا میں بنائی گئی ،ایک ویڈیوناصربٹ نامی شخص نے بنائی،وکیل رضوان عباسی نے دلائل کے بعد خود ناصر جنجوعہ کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کر دی،وکیل رضوان عباسی نے کہ ایف آئی اے کو پورے 5دن دے دیں، تاکہ تفتیش مکمل کر لیں، ڈسٹرکٹ کورٹ اسلام آباد نے تینوں ملزموں کا5روزہ ریمانڈ منظورکرلیااور انہیں ایف آئی اے کے حوالے کردیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں